اگر آئرلینڈ اور انگلینڈ کے دورہ میں کامیابی حاصل کرنی ہے تو یہ کام کرنا ہو گا ۔۔۔سابق چیف سیلیکٹر وسیم باری نے قومی کرکٹ ٹیم کو مشورہ دے دیا

لاہور(ویب ڈیسک)سابق چیف سلیکٹر وسیم باری نے کہا ہے کہ قومی کرکٹ ٹیم میں تجربہ کار کھلاڑیوں کی کمی کی وجہ سے آئرلینڈ اور انگلینڈ کا دورہ آسان ثابت نہیں ہوگا ۔ قومی ٹیم کے سابق وکٹ کیپر بلے باز وسیم باری کا کہنا تھا کہ نوجوان کھلاڑیوں کیلئے انگلش کنڈیشنز بہت

مشکل ثابت ہوں گی اور انہیں وکٹ پر بہت سنبھل کر کھیلنا ہو گا۔ان کا کہنا تھا کہ انگلینڈ کا دورہ بہت مختصر ہے ،دونوں ٹیموں کے مابین تین ٹیسٹ میچز ہونے چاہئے تھے جب کہ پی سی بی کو پانچ ون ڈے میچوں کی سیریز کیلئے بھی کوشش کرنا چاہئے تھی۔ وسیم باری کا مزید کہنا تھا کہ انگلینڈ کے خلاف دو میچوں کی ٹیسٹ سیریز نوجوان کھلاڑیوں کیلئے صلاحیتوں کے اظہار کا اچھا موقع ہے، وہ لارڈز کے تاریخی میدان پر سنچری بنا کر یا پانچ وکٹیں حاصل کر کے اپنا نام اونرز بورڈ پر درج کر اسکے۔

انہوں نے کہا کہ مصباح الحق اور یونس خان کی ریٹائرمنٹ کے بعد بیٹنگ لائن کمزور ہو چکی ہے ۔وسیم باری نے ٹیم سلیکشن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس دورے میں تین ٹیسٹ میچز کے لیے چار اوپنرز کو لے کر جانا سمجھ سے بالاتر ہے۔ انہوں نے قومی فاسٹ باؤلر زکو مشورہ دیا کہ وہ انگلش کنڈیشنز میں نتائج کیلئے لائن اور لینتھ درست رکھیں اس سے انہیں وکٹیں مل سکتی ہے ،لائن سے باہر گیندیں کرنے کا خمیازہ باؤلرز کو بھگتناپڑے گا۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈکے چیئرمین نجم سیٹھی پاکستان اور آئرلینڈ کے درمیان 11مئی سے ہونے والا تاریخی ٹیسٹ میچ کو دیکھنے کے لئے آج انگلینڈ روانہ ہوں گے۔ذرائع کے مطابق چیئرمین پی سی بی انگلینڈ میں چند روز قائم کے بعد آئرلینڈ جائیں گے اور ڈبلن میں ہونے والے ٹیسٹ میں دیکھیں گے۔

Comments

comments

Leave a Comment