بریکنگ نیوز قومی ببر شیر سلمان بٹ کی ٹیم میں واپسی

لاہور: سلمان بٹ کے ”چاہنے والے“ دوبارہ متحرک ہو گئے، فکسنگ میں سزا یافتہ بیٹسمین کوانگلینڈ لائنزسے سیریزکیلئے ”اے“ ٹیم میں شامل کرانے کی کوشش شروع کردی گئی۔۔پاکستان ”اے“ اور انگلینڈ لائنز کے مابین سیریز آئندہ ماہ یواے ای میں کھیلی جائے گی،ان مقابلوں کا مقصد باصلاحیت کرکٹرز کو مستقبل کے چیلنجز کیلیے تیار کرنا ہے،عام طور پر اس نوعیت کے ایونٹس میں ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی دکھانے والے کھلاڑیوں کو مواقع دیے جاتے ہیں، حیران کن طور پر سپاٹ فکسنگ سکینڈل 2010ءکے مرکزی کردار سلمان بٹ کو بھی ٹیم میں شامل کرانے کی مہم شروع ہوگئی۔ان کے بعض ”چاہنے والے“

خاصے متحرک ہیں۔اوپنر نے برطانیہ میں جیل کی ہوا کھائی، آئی سی سی کی جانب سے5سالہ پابندی بھی عائد ہوئی، یہ مدت مکمل ہونے کے بعد انھیں جنوری 2016ءمیں ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے کی اجازت دیدی گئی تھی،اچھی فارم کا مظاہرہ کرنے کے بعد سلمان بٹ نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں پریکٹس کرتے ہوئے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کی توجہ کا مرکز بھی بنے لیکن پی ایس ایل ٹو میں شرجیل خان، خالد لطیف،شاہ زیب حسن اور ناصر جمشید کا سپاٹ فکسنگ کیس سامنے آنے کے بعد پیدا ہونےوالی فضا میں انھیں ٹیم میں شامل نہ کرنےکا فیصلہ کیا گیا،اب ایک بار پھر اوپنر کو انگلینڈ لائنز کیخلاف موقع دلانے کی کوشش ہو رہی ہیں۔چیف سلیکٹر انضمام الحق کا موقف تھا کہ مستقبل کے تقاضوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے 30 سال سے زائد عمر کے کھلاڑیوں کو ”اے“ ٹیموں میں شامل نہیں کیا جائےگا اور فواد عالم کو ڈراپ کرتے ہوئے بھی عمر کو جواز بنایا گیا تھا تاہم ماضی داغدارہونے کے باوجود سلمان بٹ کو ”اے“ ٹیم میں شامل کرنے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔

لاہور: سلمان بٹ کے ”چاہنے والے“ دوبارہ متحرک ہو گئے، فکسنگ میں سزا یافتہ بیٹسمین کوانگلینڈ لائنزسے سیریزکیلئے ”اے“ ٹیم میں شامل کرانے کی کوشش شروع کردی گئی۔۔پاکستان ”اے“ اور انگلینڈ لائنز کے مابین سیریز آئندہ ماہ یواے ای میں کھیلی جائے گی،ان مقابلوں کا مقصد باصلاحیت کرکٹرز کو مستقبل کے چیلنجز کیلیے تیار کرنا ہے،عام طور پر اس نوعیت کے ایونٹس میں ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی دکھانے والے کھلاڑیوں کو مواقع دیے جاتے ہیں، حیران کن طور پر سپاٹ فکسنگ سکینڈل 2010ءکے مرکزی کردار سلمان بٹ کو بھی ٹیم میں شامل کرانے کی مہم شروع ہوگئی۔ان کے بعض ”چاہنے والے“

خاصے متحرک ہیں۔اوپنر نے برطانیہ میں جیل کی ہوا کھائی، آئی سی سی کی جانب سے5سالہ پابندی بھی عائد ہوئی، یہ مدت مکمل ہونے کے بعد انھیں جنوری 2016ءمیں ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے کی اجازت دیدی گئی تھی،اچھی فارم کا مظاہرہ کرنے کے بعد سلمان بٹ نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں پریکٹس کرتے ہوئے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کی توجہ کا مرکز بھی بنے لیکن پی ایس ایل ٹو میں شرجیل خان، خالد لطیف،شاہ زیب حسن اور ناصر جمشید کا سپاٹ فکسنگ کیس سامنے آنے کے بعد پیدا ہونےوالی فضا میں انھیں ٹیم میں شامل نہ کرنےکا فیصلہ کیا گیا،اب ایک بار پھر اوپنر کو انگلینڈ لائنز کیخلاف موقع دلانے کی کوشش ہو رہی ہیں۔چیف سلیکٹر انضمام الحق کا موقف تھا کہ مستقبل کے تقاضوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے 30 سال سے زائد عمر کے کھلاڑیوں کو ”اے“ ٹیموں میں شامل نہیں کیا جائےگا اور فواد عالم کو ڈراپ کرتے ہوئے بھی عمر کو جواز بنایا گیا تھا تاہم ماضی داغدارہونے کے باوجود سلمان بٹ کو ”اے“ ٹیم میں شامل کرنے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔

Comments

comments

Leave a Comment