بنگلہ دیش پریمئیر لیگ میں بال ٹمپرنگ، پاکستانی باﺅلرز ایک بار پھر زیر عتاب

ڈھاکہ:  آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کے درمیان تیسرے ٹیسٹ میچ میں بال ٹیمپرنگ سکینڈل کے بعد دنیا بھر میں بال ٹیمپرنگ پر گفتگو ہونے لگی ہے اور بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان خالد محمود نے بھی موقع ملتے ہی پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی شروع کردی ہے۔

حالیہ ٹیم منیجر خالد محمود نے کہا کہ بنگلہ دیش ڈومیسٹک کرکٹ میں بھی بال ٹیمپرنگ کی شکایات موصول ہوتی رہی ہیں مگر ایسا کسی بنگلہ دیشی کرکٹر نے نہیں کیا بلکہ پاکستانی کرکٹرز ایسا کرتے ہیں، بنگلہ دیش پریمئیر لیگ میں بے شمار بال ٹیمپرنگ کی شکایات موصول ہوئی مگر ہر بار پیچھے پاکستانی کرکٹر کا نام ہی سامنے آیا۔

خالد محمود کا مزید کہنا تھاکہ ڈھاکہ لیگ میں ایسا بھی ہوا کہ ایک باﺅلر نے پہلے 5اوورز میں40رنز دیئے تو اگلے پانچ اوورز میں پانچ وکٹیں لے لیں، ایسی انوکھی ریورس سوئنگ تب ہی ہوتی دیکھی جب پاکستانی فاسٹ باﺅلر بولنگ کررہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش پریمئیر لیگ میں بھی ایسا ہی ہوتا ہے مگر کبھی ایسی بات پر ایکشن نہیں لیا گیا جو غلط ہے۔

Comments

comments

Leave a Comment