رمیز راجہ لیڈز ٹیسٹ ہارنے والی قومی ٹیم پر شدید برہم

لاہور : سابق قومی کپتان رمیز راجہ نے انگلینڈ کیخلاف سیریز جیتنے کے سنہری موقع کو گنوانے پر پاکستانی ٹیم کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ ”لارڈز ٹیسٹ میچ جیتنے کے بعد پاکستانی کرکٹ ٹیم کے پاس بہترین موقع تھا کہ وہ نئی تاریخ رقم کرتی لیکن سیریز ڈرا کرنے پر ہی اکتفا کرلیا گیا،نوجوان کرکٹرز کو سمجھنا ہو گا کہ ٹیسٹ کرکٹ میں اپنے حساب سے نہیں کھیلنا چاہئے بلکہ اگر وہ جیتنا چاہتے ہیں تو پھر انہیں بھرپور جنگ لڑنا ہو گی“۔

قومی ٹیم کے سابق کپتان اور او پننگ بلے باز کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کی نوجوان ٹیم ہے جو سیکھنے کے مرحلے سے گزر رہی ہے لیکن اسے یہ بھی سمجھنا ہو گا کہ کسی بھی ٹیم کیخلاف آسانی سے ہتھیار نہیں ڈالے جاتے بلکہ لڑ کر ہارا جائے تو برا نہیں لگتا۔ رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ ابتداءہی میں پلیئرز کو یہ اہم بات سیکھنا چاہئے کہ مقابلہ جم کر ہوتا ہے ورنہ انہیں آئندہ بھی آسانی سے ہار ماننے کی عادت پڑ جائے گی۔

سابق قومی کپتان کا کہنا تھا کہ نوجوان کرکٹرز کو سمجھنا ہو گا کہ یہ ٹیسٹ کرکٹ ہے جس میں سیشن بائی سیشن کے اعتبار سے میچ کو اپنے حق میں کیا جاتا ہے جبکہ انہیں ملک اور قوم کے علاوہ خود اپنے وقار کیلئے بھی وہ کام کرنا ہوگا جو کہ ابھی تک پاکستانی سسٹم میں موجود نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ قومی کرکٹ ٹیم کو سمجھنا ہو گا کہ پاکستان قوم کرکٹ کے کھیل سے پیار کرتی ہے لہٰذا وہ خود سے وعدہ کریں کہ آئندہ ایسی غلطیاں نہیں دہرائیں گے اور اس طرح کی مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کبھی مستقبل میں نہیں کریں گے۔

یاد رہے کہ پاکستان کو لارڈزٹیسٹ میں کامیابی کے بعد 22سال بعد برطانوی سر زمین پر سیریز جیتنے کا سنہری موقع ملا تھا تاہم لیڈز ٹیسٹ میں ناتجربہ کاری گرین شرٹس کے آڑے آگئی اور اسے اننگز کی شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔

Comments

comments

Leave a Comment