عمران خان کے وزیر اعظم بننے سے پاکستان کرکٹ کو کیا فائدہ ہوگا کپتان سرفراز احمد نے بھی عمران خان سے امیدیں لگا لیں

لاہور :  پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ عمران خان کے اقتدار میں آنے سے کرکٹ کو تقویت ملے گی۔۔سندھ انسٹی ٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن (ایس آئی یو ٹی) کے زیر اہتمام ”انسانی زندگی بچائ“ واک کا اہتمام کیا گیا جس کا مقصد انسانی اعضا عطیہ کرنا ہے۔ واک میں ڈاکٹر ادیب رضوی اور قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی جس میں ہزاروں کی تعداد میں ورکرز اور عوام بھی شریک ہوئے۔
اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ سب لوگ آئیں اعضا عطیہ کریں، اس کار خیر میں اپنا حصہ ڈالیں اور زندگیاں بچائیں، میری بھتیجی بھی جگر کے عارضے میں مبتلا ہے اور پاکستان میں علاج نہ ہونے کی وجہ سے وہ بھارت گئی ہوئی ہے۔
حالیہ عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کی کامیابی پر سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ عمران خان کا وزیر اعظم بننا خوش آئند ہے کیوں کہ عمران خان کے اقتدار میں آنے سے کرکٹ کو تقویت ملے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ پی سی بی کا غیر ملکی لیگز کے حوالے سے اقدام درست ہے کیوں کہ لیگز زیادہ کھیلنے والے کھلاڑیوں کی فٹنس متاثر ہوتی ہے تاہم کنٹریکٹ والے کھلاڑیوں کو سیزن میں شرکت کرنا چاہیے جب کہ ایشین گیمز میں کامیاب ہونے کی بھر پور کوشش کریں گے۔واضح رہے کہ قومی اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف(((پی ٹی آئی ) 115 نشستیں جیت کر ایوان زیریں کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے، پاکستان مسلم لیگ (ن) 64 نشستوں کے ساتھ دوسری جب کہ پاکستان پیپلز پارٹی 43 کے ساتھ تیسری بڑی جماعت بن کر ابھری ہے، متحدہ مجلس عمل(((ایم ایم اے ) کی قومی اسمبلی میں 12، مسلم لیگ (ق)5، ایم کیو ایم پاکستان 6 ، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس(جی ڈی اے) 2 جب کہ عوامی مسلم لیگ، پاکستان تحریک انسانیت، عوامی نیشنل پارٹی((اے این پی)) اوربلوچستان نیشنل پارٹی (بی این پی) کا ایک ایک امیدوار کامیاب ہوا ہے، دوسری جانب 12 آزاد امیدوار قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے ہیں۔

Comments

comments

Leave a Comment