ل راؤنڈر فہیم اشرف نے ریکارڈ بک الٹ پلٹ کر رکھ دی ، پہلے ہی ٹیسٹ میں بڑا کارنامہ سر انجام دے کر مداحوں کے دل جیت لیے

ڈبلن: آل رائونڈر فہیم اشرف آئرلینڈ کیخلاف اپنے ٹیسٹ ڈیبیو پر تیز ترین نصف سنچری بنانے والے پاکستانی بیٹسمین بن گئے۔تفصیلات کے مطبق فہیم اشرف نے آئرلینڈ کیخلاف 50 رنز مکمل کرنے کے لیے 52 بالز کھیلیں، فہیم سے قبل یہ ریکارڈ عمر اکمل کے پاس تھا جنھوں نی2009 میں نیوزی لینڈ سے

میچ میں57 بالز پر ففٹی بنائی تھی۔فہیم اشرف ڈیبیو پر8 سے 11 نمبر کے درمیان بیٹنگ کرتے ہوئی50 سے زائد رنز بنانے والے 20 سال میں پہلے پاکستانی بھی ثابت ہوئے،آخری بار1997میں جنوبی افریقہکیخلاف اظہر محمود نے 128 رنز ناٹ آٹ بنائے تھے۔ واضح رہے کہ پاکستان کے خلاف تاریخی ٹسیٹ میچ کے تیسرے روز پہلی اننگز میں آئرلینڈ کی ٹیم مشکلات کا شکار ہے اور اس کے ابتدائی 3 بلے باز 5 رنز پر پویلین لوٹ چکے ہیں۔ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز پاکستان ٹیم نے 9 وکٹوں کے نقصان پر 310 رنز بنانے کے بعد پہلی اننگز ڈکلیئر کردی ہے جس کے جواب میں آئرلینڈ کی ٹیم بیٹنگ جاری ہے اور مشکلات کا شکار ہے۔آئرش ٹیم کھانے کے وقفے تک 6.1 اوورز میں 5 کے مجموعی اسکور پر 3 وکٹیں گنواچکی ہے۔پاکستان کی جانب سے محمد عباس نے 2 اور محمد عامر نے ایک وکٹ حاصل کی ہے۔علاوہ ازیں پاکستان نے ٹیسٹ کے تیسرے روز 6 وکٹوں کے نقصان پر 268 رنز سے کھیل کا آغاز کیا تو 8 رنز کے اضافے کے بعد شاداب خان 55 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔قومی ٹیم کو آٹھویں وکٹ کا خسارہ فہیم اشرف کی صورت میں ہوا جو 83 رنز بناکر پویلین لوٹے جس کے بعد 306 کے

مجموعی اسکور پر محمد عامر بھی 13 رنز بنانے کے بعد کیچ تھما بیٹھے۔ اس سے قبل آئرلینڈ کے خلاف واحد ٹیسٹ میچ کا دوسرے روز کا کھیل خراب موسم کے باعث قبل از وقت ختم کیا گیا جس میں قومی ٹیم کا ٹاپ آرڈر بری طرح ناکام رہا۔ ابتدائی 6 بلے بازوں کے جلد آؤٹ ہونے کے بعد شاداب خان اور فہیم اشرف نے محتاط انداز سے کھیلتے ہوئے ٹیم کو سہارا دیا اور ساتویں وکٹ پر 109 رنز جوڑے۔قومی ٹیم نے گزشتہ روز آئرلینڈ کے خلاف 76 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان 268 رنز بنائے تھے کہ کم روشنی کے باعث میچ کو روک دیا گیا جو دوبارہ شروع نہ ہو سکا۔دوسرے روز کا کھیل ختم ہوا تو فہیم اشرف 61 اور شاداب خان 52 رنز کے ساتھ وکٹ پر موجود تھے۔دونوں کھلاڑیوں نے اپنی پہلی نصف سنچری اسکور کی اور دونوں کے درمیان 109 رنز کی شراکت قائم ہو چکی ہے۔پاکستان کی جانب سے اظہر علی اور امام الحق نے اننگز کا آغاز کیا لیکن 13 کے مجموعی اسکور پر اظہر علی 4 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔پہلا ٹیسٹ میچ کھیلنے والے امام الحق ون ڈے ڈیبیو کی طرح بڑی اننگز نہ کھیل سکے اور 13 ہی کے مجموعی اسکور پر 7 رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوئے۔اوپننگ بلے بازوں کے جلد آؤٹ ہونے کے بعد حارث سہیل اور اسد شفیق نے محتاط انداز سے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا لیکن کھانے کے وقفے کے بعد جلد ہی حارث سہیل 31 کے انفرادی اسکور پر ہمت ہار گئے۔بابراعظم بھی 14 رنز بناسکے جب کہ اسد شفیق اپنی 19 ویں نصف سنچری بنانے کے بعد 62 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد بھی باہر جاتی گیند کو چھیڑنے کی کوشش میں سلپ میں کیچ آؤٹ ہوئے، انہوں نے 20 رنز کی اننگز کھیلی۔

Comments

comments

Leave a Comment