نئے پاکستان کا کمال۔۔۔ قومی ٹیم کی ناقص کارکر دگی پر وزیر اعظم نے بڑا ایکشن لے لیا

لاہور: ایشیا ءمیں قومی کرکٹ ٹیم کے ناقص کاکردگی پر وزیر اعظم عمران خان نے بھی شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ ((پی سی بی )سے مکمل رپورٹ طلب کر لی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم گزشتہ روز ایشیاءکپ کے اہم ترین مقابلے میں بنگلہ دیش کے ہاتھوں شکست کے بعد ایونٹ سے باہر ہوچکی ہے جس پر کھلاڑیوں اور ٹیم مینجمنٹ کو کڑ ی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

قومی ٹیم کی اس ناقص کاکردگی پر وزیر اعظم عمران خا ن نے بھی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے چیئر مین پی سی بی احسان مانی سے مکمل رپورٹ کرلی ہے ۔ وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ قومی ٹیم نے ایشیاءکپ میں بیٹنگ ،باﺅلنگ اور فیلڈنگ تینوں شعبوں میں بدترین کاکردگی کا مظاہر ہ کیا ، احسان مانی ٹیم کی سلیکشن کمیٹی اور دیگر سے رپورٹ طلب کرکے پیش کریں ۔ یادرہے کہ بنگلادیش نے پاکستان کو سپرفور مرحلے میں 37 رنز سے شکست دے کرایشیا کپ کے فائنل کا ٹکٹ کٹا لیا۔

فائنل میں رسائی کے لیے پاکستان کا مقابلہ بنگلادیش سے ہوا جس میں قومی بلے بازوں نے ناقص کارکردگی کے سلسلے کو برقرار رکھتے ہوئے 240 رنز کے ہدف کو خود کے لیے پہاڑ بنالیا ، نسبتاً کمزور بالنگ اٹیک کے سامنے بھی پاکستانی ٹاپ آرڈر مکمل ناکام ہوگیا اور صرف 18 رنز پر گرین شرٹس کے 3 کھلاڑی پویلین لوٹ گئے ،کپتان سرفراز احمد 10، فخر زمان اور بابراعظم 1،1رن بناکر چلتے بنے۔

امام الحق اور شعیب ملک نے محتاط انداز میں اننگز کو آگے بڑھایا اور 67 رنز کی شراکت داری قائم کرکے ٹیم کو سہارا دینے کی کوشش کی تاہم شعیب ملک زیادہ دیر مزاحمت نہ کرسکے اور 30 رنز پر کیچ آﺅٹ ہوگئے، کچھ دیر بعد شاداب خان بھی پویلین لوٹ گئے، انہوں نے 4 رنز بنائے۔اوپنر امام الحق ایک اینڈ پر جمے رہے اور انہوں نے آصف علی کے ساتھ مل کر 74 رنز جوڑے، جو ڈوبتی کشتی کو منجھدار سے نکالنے کے لیے بے سود ثابت ہوئے، آصف علی 31 رنز پر پویلین لوٹے تو کچھ دیر بعد امید کی آخری کرن امام الحق بھی آﺅٹ ہوگئے،انہوں نے 83 رنز کی باری کھیلی۔

ہدف کے تعاقب میں پاکستان مقررہ اووز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 202 رنز ہی بنا سکا۔بنگلادیش کی جانب سے مستفیض الرحمان نے 4 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا جبکہ مہدی حسن نے 2،روبیل حسین محموداللہ اور سومیا سرکار نے1،1وکٹ حاصل کی۔قبل ازیں بنگلادیش کے کپتان نے ٹاس جیتا اور پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا، پاکستانی بالرز نے حریف ٹیم کے ابتدائی تین بلے بازوں کو صرف 12 رنز پر پویلین کی راہ دکھائی، آﺅٹ ہونے والے بیٹسمین لیتن داس 6، سومیا سرکار صفر اور مومن الحق 5 رنز بناسکے۔

3 وکٹیں جلد گرنے کے بعد تجربہ کار مشفق الرحیم اور محمد متھون نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 144 رنز کی شراکت داری کرکے ٹیم کو بحران سے نکالا تاہم محمد متھون 60 رنز پر حسن علی کا شکار بن گئے، امرالقیس 9 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے جب کہ مشفق الرحیم ایک رن کے فرق سے سنچری مکمل نہ کرسکے اور 99 رنز پر کیچ آﺅٹ ہوگئے۔مہدی حسن مراز 12،محمود اللہ 25 ، روبیل حسین ایک جب کہ مشرفی مرتضیٰ 13 رنز بناسکے، یوں بنگلادیش کی پوری ٹیم 49 ویں اوور میں 239 رنزبناکر آﺅٹ ہوگئی۔ایونٹ کا پہلا میچ کھیلنے والے جنید خان نے 4 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا جبکہ شاہین شاہ آفریدی اور حسن علی نے 2،2 شکار کیے،سپنر شاداب خا ن کے حصے میں ایک وکٹ آئی۔

Comments

comments

Leave a Comment