پشاور زلمی، ملتان سلطانز اور کراچی کنگز میں سے کون سی ٹیم پلے آف مرحلے میں جائے گی؟ دلچسپ ترین صورتحال پیدا ہو گئی، تینوں ٹیموں کو آگے جانے کیلئے کیا کرنا ہو گا؟ تمام تفصیلات جانئیے

دبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ کے 25ویں میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی ملتان سلطانز کے خلاف فتح نے پشاور زلمی کے پلے آف مرحلے میں کوالیفائی کرنے کی امیدیں برقرار رکھی ہیں اور باقی ٹیموں کے اگلے مرحلے میں جانے کیلئے دلچسپ صورتحال پیدا ہو گئی ہے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کی فتح کیساتھ ہی کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے فائنل فور کیلئے کوالیفائی کرلیا ہے اور اب کراچی کنگز ، ملتان سلطانز اور پشاور زلمی میں سے 2 ٹیموں نے اگلے مرحلے میں جانا ہے۔ ملتان سلطانز کی بدقسمتی یہ ہے کہ اس نے اپنے تمام 10 میچز کھیل لئے ہیں اور اب فائنل فور میں رسائی کا دارومدار کراچی اور پشاور کی کارکردگی پر ہے۔
پشاور زلمی اور کراچی کنگز کے درمیان جمعرات کو میچ کھیلا جائے گا اور اگر کراچی کنگز یہ میچ جیتنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو اسلام آباد، کوئٹہ، ملتان اور کراچی کے ساتھ پلے آفس اور ایلیمنیٹرز کی لائن اپ مکمل ہوجائے گی۔
لیکن اگر اس میچ میں پشاور زلمی کامیابی حاصل کر لیتی ہے تو ملتان سلطانز اور کراچی کنگز کو پشاور زلمی کے اگلے میچ کے نتیجے کا انتظار کرنا پڑے گا جو اس نے لاہور قلندرز کے خلاف کھیلنا ہے۔ اگر قلندرز یہ میچ جیت گئے تو اسلام آباد، کوئٹہ، کراچی اور ملتان فائنل فور میں جگہ بنالیں گے جبکہ اگر پشاور زلمی اپنے اگلے دونوں میچز جیت جاتی ہے تو براہ راست پلے آف کیلئے کوالیفائی کرجائے گی ۔

پشاور زلمی کے دونوں میچ جیت کر پلے آف مرحلے میں چلے جانے کی صورت میں کراچی کنگز اور ملتان سلطانز کی فائنل فور میں شمولیت کا فیصلہ فیصلہ پی ایس ایل کے آخری لیگ میچ پر منحصر ہوگا جو اسلام آباد یونائیٹڈ اور کراچی کنگز کے درمیان کھیلا جائے گا لیکن کراچی کنگز کے پاس ملتان سلطانز کے مقابلے میں کوالیفائی کرنے کا زیادہ بہتر موقع موجود ہوگا۔
کراچی کنگز اگر یہ میچ جیت جاتے ہیں تو براہ راست فائنل فور میں چلے جائیں گے لیکن اگر ہار بھی جائیں تو رن ریٹ بہتر بنا کر فائنل فور میں جا سکتے ہیں کیونکہ شکست کی صورت میں ملتان سلطانز اور کراچی کنگز کے 9،9 پوائنٹس ہو جائیں گے۔

پاکستان سپر لیگ کا تیسرا سیزین اس وقت انتہائی دلچسپ مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اور فائنل فور میں جگہ بنانے کیلئے تین ٹیموں کے درمیان سخت مقابلہ ہے۔ لاہو رقلندرز ایونٹ سے پہلے ہی باہر ہو چکے ہیں مگر مسلسل چھ شکستوں کے بعد حاصل ہونے والی کامیابیوں نے دیگر ٹیموں کیلئے مشکلات پیدا کر دی ہیں۔

Comments

comments

Leave a Comment