1گیند پر6رنز درکار۔۔۔نہ کوئی چھکا لگا نہ کوئی چوکا پھر بھی ٹارگٹ حاصل کر لیا گیا۔۔مگر کیسے؟کرکٹ کی تاریخ کا انوکھا ترین واقعہ

ئی دہلی: دنیائے کرکٹ حیرت انگیز واقعات سے بھری پڑی ہے تاہم بھارت میں گزشتہ روز ایک ایسا میچ اختتام کو پہنچا جس میں بیٹنگ کرنے والی ٹیم کو جیت کے لیے ایک گیند پر چھ رنز درکار تھے اور اس نے ایک گیند قبل ہی کامیابی اپنے نام کرلی ۔یہ حیرت انگیز واقعہ آدھرش کرکٹ کلب ،پالیگاﺅں 2019ءمیں مہاراشٹرا کی ٹیم ڈیسائی اور آندھرا کی ٹیم جونی دمبولی کے درمیان میچ میں پیش آیا جہاں ڈیسائی کی ٹیم کو آخری گیند پر جیت کے لیے 6رنز درکار تھے اور ڈیسائی نے ایک گیند پہلے ہی میچ جیت لیا ۔

ڈیسائی کے بلے باز نے ماضی کی طرح چھکا لگا کر میچ ختم نہیں کیا بلکہ جونی دمبولی کے باﺅلرنے مسلسل چھ وائیڈ گیندیں کروا کر وہ کام کردیا جو اس سے قبل کسی اور باﺅلر نے نہیں کیا تھا ،ڈیسائی نے 4.5اوورز میں 76رنز کے ہدف کے تعاقب میں 4وکٹوں پر70رنز بنائے تھے تاہم دمبولی کے بائیں ہاتھ کے فاسٹ باﺅلر نے اپنی اگلی چھ گیند یں آف سٹمپ سے باہر وائیڈ کرکے اپنی ٹیم کو یقینی جیت سے محروم کردیا –

مسلسل چھ وائیڈز کے بعد جونی دمبولی کے کھلاڑی باﺅلر پر شدید غصے کا اظہار کرتے نظر آئے اور بعض نے تو اس کی جانب انگلیاں کرکے اپنے خیالات کا اظہار بھی کیا ۔

اس انوکھے میچ کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جہاں صارفین نے اس پر طرح طرح کے کمنٹس کیے ، اس میچ کے فکس ہونے کے کوئی شواہد نظر نہیں آئے تاہم بعض صارفین نے اس جانب بھی اشارہ کیا ،بعض صارفین نے اس پر بھی حیرانی ظاہر کی کہ باﺅلر نے کس طرح مسلسل چھ گیندیں وائیڈ کروائیں ، یہ پہلا موقع تھا جب کسی ٹیم نے اس طرح میچ میں کامیابی حاصل کی تاہم مستقبل میں اس طرح کے حیرت انگیز واقعات مزید پیش آسکتے ہیں

https://maharashtratimes.indiatimes.com/sports-news/cricket-news/6-runs-needed-off-last-ball-team-wins-with-1-ball-to-spare/articleshow/67460176.cms

Comments

comments

Leave a Comment